گیان واپی مسجد معاملہ: وارانسی فاسٹ ٹریک کورٹ نے 17 نومبر کو فیصلہ سنانے کا کیا اعلان

ورانسی : وارانسی کے سول فاسٹ ٹریک کورٹ نے پیر کے روز گیان واپی معاملہ میں سماعت کے۔ آج فاسٹ ٹریک کورٹ گیان واپی معاملہ میں ایک عرضی پر فیصلہ سنانے والا تھا، لیکن سول جج سینئر ڈویژن مہندر کمار پانڈے کی عدالت نے 2 دن بعد کے لیے فیصلہ ملتوی کر دیا ہے۔ اب اس معاملے میں 17 نومبر کو فیصلہ آئے گا۔ 17 نومبر کو فیصلہ اس بات پر آنے والا ہے کہ عرضی قابل سماعت ہے کہ نہیں۔
دراصل کرن سنگھ بسین نے عدالت میں ایک عرضی داخل کی تھی جس میں چار مطالبات کیے گئے تھے۔ مطالبات تھے: 1. فوری اثر سے بھگوان آدی وشویشور شمبھو وراجمان کی مستقل پوجا شروع ہو۔ 2. پورے گیان واپی احاطہ میں مسلمانوں کا داخلہ ممنوع کیا جائے۔ 3. پورا گیان واپی احاطہ ہندوؤں کے حوالے کیا جائے۔ 4. مندر کے اوپر بنے متنازعہ ڈھانچہ کو ہٹایا جائے۔
عرضی پر عدالت نے دونوں فریقین کی دلیلیں سننے کے بعد گزشتہ تاریخ میں فیصلہ محفوظ رکھ لیا تھا۔ ہندو فریق کے وکیل انوپم دویدی نے کہا کہ عدالت نے اپنا فیصلہ تیار کر لیا ہے، لیکن کچھ تکنیکی اسباب کے سبب مزید دو دن کا وقت لیا ہے۔ ضلع فاسٹ ٹریک سینئر ڈویژن کورٹ میں معاملوں کا بہت بوجھ ہے جس کے سبب یہ فیصلہ 2 دنوں کے لیے ملتوی کیا گیا ہے۔

 

About awazebihar

Check Also

غریبوں کو بھی امیروں جیسی طبی سہولیات ملنی چاہئے : مانڈویہ

نئی دہلی، 09 جون (یو این آئی) صحت اور خاندانی بہبود کے مرکزی وزیر منسکھ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *