کھنڈوا میں مسلم کے گھر جبراً مورتی نصب کرنے پر کشیدگی

کھنڈوا : مدھیہ پردیش کے کھنڈوا ضلع میں ایک مسلم کے گھر میں جبراً ہنومان کی مورتی نصب کرنے کے بعد فرقہ وارانہ کشیدگی پھیل گئی ہے۔ دونوں طبقہ کے درمیان ہوئے تصادم میں ایس پی، ایس ایچ او سمیت کئی پولیس اہلکار زخمی ہو گئے ہیں۔ علاقے مین دفعہ 144 نافذ کر کثیر تعداد میں پولیس فورس کی تعیناتی کی گئی ہے۔ فی الحال حالات قابو میں بتائے جا رہے ہیں، لیکن کشیدگی برقرار ہے۔رپورٹ کے مطابق یہ واقعہ اتوار کو بھوپال سے قریب 360 کلومیٹر دور کھنڈوا میں منشی چوک علاقے کے پاس واقع ایک رہائشی کالونی میں پیش آیا۔ ایک سینئر پولیس افسر نے کہا کہ اتوار کو رات تقریباً 8.30 بجے لوگوں کے ایک گروپ نے ایک گھر میں گھس کر ہنومان کی مورتی نصب کی اور منتر پڑھنا شروع کر دیا۔ اس وجہ سے دونوں طبقات کے لوگ گھر کے باہر جمع ہو گئے۔ دونوں فریقین نے ایک دوسرے پر پتھراؤ کیا۔ پولیس نے فوراً کارروائی کی اور بھیڑ کو منتشر کیا۔
پولیس کے مطابق جس گھر میں واقعہ پیش آیا، وہ گنیش جادھو کا تھا جسے حال ہی میں ایک مسلم نوجوان شیخ اصغر کو فروخت کیا گیا تھا۔ مشتعل لوگوں نے حالات قابو میں کرنے کے لیے پہنچی پولیس پر بھی حملہ کیا، جس سے انھیں بھیڑ کو منتشر کرنے کے لیے آنسو گیس کا استعمال کرنا پڑا۔ پتھراؤ میں ایک پولیس سپرنٹنڈنٹ اور ایس ایچ او سمیت کم از کم چار پولیس اہلکاروں کے زخمی ہونے کی اطلاع ہے۔ پولیس نے پیر کے روز کہا کہ حالات قابو میں ہیں۔ حالانکہ علاقے میں کثیر تعداد میں پولیس فورس کی تعیناتی کی گئی ہے اور آس پاس کے علاقوں میں دفعہ 144 نافذ کر دی گئی ہے۔پولیس نے پیر کے روز کہا کہ واقعہ میں ملوث پانچ مبینہ جرائم پیشوں کو اب تک حراست میں لیا گیا ہے اور دیگر کی شناخت کی جا رہی ہے۔ پولیس افسران نے کہا کہ ’’گھر میں بغیر اجازت داخل ہونے، قتل کی کوشش اور فساد کرنے سے متعلق تعزیرات ہند کی مختلف دفعات کے تحت تین معاملے درج کیے گئے ہیں اور اب تک پانچ لوگوں کو حراست میں لیا گیا ہے۔ پورے واقعہ کا کلیدی ملزم ہندو لیڈر روی اودھ ہے۔‘‘
فی الحال کھنڈوا میں پولیس کی فوری کارروائی نے فرقہ وارانہ تشدد کو بڑھنے سے روک دیا ہے۔ قابل ذکر ہے کہ گزشتہ سال اپریل کے ماہ میں کھنڈوا کے ہی سرحدی ضلع کھرگون میں زبردست فرقہ وارانہ تصادم ہوا تھا اور اس دوران وہاں جو دہشت ناک حالات پیدا ہوئے تھے، اس سے ابھی تک لوگ باہر نہیں نکل پائے ہیں۔

About awazebihar

Check Also

غریبوں کو بھی امیروں جیسی طبی سہولیات ملنی چاہئے : مانڈویہ

نئی دہلی، 09 جون (یو این آئی) صحت اور خاندانی بہبود کے مرکزی وزیر منسکھ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *