نتیش کمار بدعنوانی سے سمجھوتہ کرکے لالو خاندان کو بچا رہے ہیں: سشیل کمار مودی

پٹنہ: بہار کے سابق نائب وزیر اعلی اور راجیہ سبھا کے رکن سشیل کمار مودی نے کہا کہ وزیر اعلی نتیش کمار نے وزیر اعظم بننے کے اپنے خواب کے دباؤ میں بدعنوانی سے سمجھوتہ کیا اور وہ چارہ گھوٹالہ سے لے کر “زمین گھوٹالہ” تک ہر چیز میں ملوث تھے۔ لالو خاندان کو بچانے میں لگے ہوئے ہیں۔ مودی نے کہا کہ اگر تحقیقاتی ایجنسیوں کی کارروائی کے بعد لالو خاندان کو پھنسانے کے لیے کیے جانے والے جھوٹے پروپیگنڈے میں کوئی مادہ ہوتا تو لالو پرساد کو چارہ گھوٹالہ کے پانچوں مقدمات میں عدالت نے قصوروار نہ ٹھہرایا ہوتا۔انہوں نے کہا کہ 2008 میں آنجہانی شرد یادو اور لالن سنگھ نے لالو پرساد کے خلاف بدعنوانی کے مقدمات کی تحقیقات کے لیے پہل کی تھی۔ جے ڈی یو نے تمام دستاویزات سی بی آئی کو دستیاب کرائے اور اس وقت کے وزیر اعظم منموہن سنگھ کو میمورنڈم بھی دیا۔ آج یہی لوگ لالو پرساد کے خلاف کارروائی روکنے کے لیے وزیر اعظم کو خط لکھ رہے ہیں۔مودی نے کہا کہ لالو پرساد نے اقتدار میں رہتے ہوئے صرف ایک منتر اپنایا ’’تم مجھے زمین دو، میں تمہیں نوکری دوں گا‘‘۔ انہوں نے کہا کہ ایک غریب گھرانے میں پیدا ہونے والے لالو پرساد ہر کام کے لیے زمین لے کر سب سے بڑے زمیندار بن گئے۔ ان کے پاس پٹنہ میں ایک لاکھ مربع فٹ سے زیادہ قیمتی زمین ہے۔ مودی نے کہا کہ تیجسوی پرساد یادو بتائیں کہ وہ دہلی کی نیو فرینڈز کالونی میں اربوں روپے کے چار منزلہ مکان کا مالک کیسے بن گیا۔انہوں نے کہا کہ تیجسوی یادو نے انٹرمیڈیٹ تک تعلیم حاصل نہیں کی، کرکٹ میں فیل ہو گئے، لیکن کوئی کاروبار یا صنعت کیے بغیر صرف 29 سال کی عمر میں 52 جائیدادوں کے مالک کیسے بن گئے۔ کیا اس کی جانچ نہیں ہونی چاہیے؟ مودی نے کہا کہ لالو پرساد نے ایم ایل اے، ایم پی، وزیر، ایم ایل سی بنانے کے بجائے خاندان کے افراد کے نام قیمتی زمینیں لی اور خود پورے خاندان کو پھنسایا۔ انہیں کسی اور نے نہیں پھنسایا۔ انہوں نے کہا کہ سابق ایم ایل اے ابو دوجانہ وہی شخص ہے جو پٹنہ میں تیجسوی یادو کا 750 کروڑ کا مال بنا رہا تھا۔

About awazebihar

Check Also

ایس ٹی ای ٹی امتحان میں 79.79 فیصد امید وار کامیاب

پٹنہ (اے بی این) بہار اسکول اگزامنیشن بورڈ کے چیئرمین آنند کشور نے منگل کو …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *